باھر نکلے تودھرنے کی ضرورت نہیں پڑے گی

چیئرمین پیپلز پارٹی بلاول بھٹو زرداری کا کہنا ہے کہ اگر ہم باہر نکلے تودھرنےکی ضرورت ہی نہیں ہوگی، ہم آدھے راستے میں ہوں گے اور عمران خان کی حکومت گر جائے گی جبکہ شہباز شریف کا کہنا ہے کہ ملک کےحالات سدھارنا سلیکٹڈ حکومت کےبس میں نہیں۔ 

بلاول بھٹو زرداری نے کہا سپریم کورٹ نیب کو کالا قانون مانتی ہے، اپوزیشن کا بھی یہی مؤقف ہے، یہی مؤقف جسٹس باقر اور اسلامی نظریاتی کونسل کا بھی ہے، نیب ہویا کوئی بھی قانون ہم جمہوریت، انسانی حقوق اور عدالتی نظام پریقین رکھتے ہیں، حکومت نے انسانی اورجمہوری حقوق پرحملہ کیا تو نہ نیب کو سپورٹ کریں گے نہ ایف اے ٹی ایف کو، حکومتی نیب آرڈیننس فیل ہوچکا۔

خیال رہے کہ اپوزیشن نے عید کے بعد حکومت کےخلاف نئے محاذ کی تیاری شروع کردی اور اس سلسلے میں بڑی سیاسی جماعتوں کے رہنماؤں نے اپنی سرگرمیاں تیز کردی ہیں۔

پاکستان کے تین اہم سیاسی رہنما شہباز شریف، بلاول بھٹو زرداری اور مولانا فضل الرحمان ان دنوں لاہور میں ہیں جہاں گزشتہ روز شہباز شریف اور فضل الرحمان کی ملاقات ہوئی تھی اور آج بلاول نے فضل الرحمان اور اپوزیشن لیڈر شہباز شریف سے ملاقات کی۔

مزید پڑھیں:  حمزہ شہباز کو بھی جیل بھیج دیا گیا: رمضان شوگر ملز کیس