بلاول بھٹو نے وزیر اعظم پر بلیک میلنگ کا الزام لگا دیا

پاکستان پیپلز پارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری نے چیئرمین نیب کی ویڈیو لیک کیے جانے کو وزیراعظم کا بلیک میلنگ کا حربہ قرار دیا ہے۔ان کا کہنا ہے کہ جب بات پرویز خٹک اور اتحادیوں پر آئی تو وزیراعظم بلیک میلنگ پر اتر آئے۔انہوں نے کہا کہ پیپلزپارٹی نے کبھی ذاتیات کی سیاست نہیں کی، ہمیں صرف چیئرمین نیب کے انٹرویو پر اعتراض ہے۔
رتو ڈیرو میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ وزیراعظم کے دو معاونین خصوصی کے ذریعے ویڈیو کا میڈیا پر آنا محض اتفاق نہیں ہوسکتا، ہم ویڈیو لیک کرنے پر وزیراعظم اور ان کے معاونین خصوصی کی مذمت کرتے ہیں۔ان کا کہنا تھا کہ چیئرمین نیب کے انٹرویو سے عدالتی حکم کی خلاف ورزی ہوئی ہے، کسی فرشتے کو بھی چیئرمین نیب بنا دیا جائے تو فرق نہیں پڑے گا کیونکہ آمر کا بنایا گیا نیب کا قانون ایک کالا قانون ہے۔انہوں نے کہا کہ نیب گردی اور ایف آئی اے کا نظام چلنے سے بزنس مین خوفزدہ ہیں، اس نظام کی وجہ سے بزنس اور بیوروکریٹ کام کرنے کے لیے تیار نہیں ہیں۔

مزید پڑھیں:  کینیڈا کی شہریت کا حصول کس طرح ممکن ؟