فخر زمان ڈبل سنچری بنانے والے پہلے پاکستانی بن گئے

بلاوایو میں پاکستان اور زمبابوے کے درمیان پانچ ایک روزہ کرکٹ میچوں کی سیریز کے چوتھے میچ میں پاکستان کی ٹیم ٹاس جیت کر پہلے بیٹنگ کر رہی ہے۔

اس وقت کریز پر فخر امام اور آصف علی موجود ہیں اور اب سے کچھ دیر پہلے تک پاکستان نے 47 اوورز میں ایک وکٹ کے نقصان کے 359 رنز بنا لیے ہیں۔

پاکستان کی جانب سے امام الحق اور فخر زمان نے اننگز کا آغاز کیا اور 304 رنز کی ریکارڈ شراکت قائم کی۔

یہ پاکستان کی جانب سے کسی بھی وکٹ کے لیے بہترین اور ایک روزہ کرکٹ کی تاریخ کی چوتھی سب سے بڑی شراکت ہے۔

پاکستان کی پہلی وکٹ 304 کے سکور پر گری جب امام الحق آٹھ چوکوں کی مدد سے 113 رنز بنانے کے بعد کیچ آؤٹ ہوئے۔

فخر زمان نے دھواں دھار بلے باری جاری رکھی اور وہ پاکستان کی جانب سے ایک روزہ کرکٹ میں ڈبل سنچری بنانے والے پہلے بلے باز بن گئے۔

اس کے ساتھ ہی وہ پاکستان کی جانب سے ایک روزہ کرکٹ میں سب سے بڑا انفرادی سکور بنانے والے کھلاڑی بھی بن گئے۔ انھوں نے سعید انور کا ریکارڈ توڑا جو انھوں نے انڈیا کے خلاف 194 رنز کی اننگز کھیل کر قائم کیا تھا۔

فخر زمان نے یہ ڈبل سنچری 23 چوکوں اور پانچ چھکوں کی مدد سے مکمل کی۔

چوتھے میچ کے لیے پاکستان نے وہی ٹیم میدان میں اتاری جس نے تیسرا میچ کھیلا تھا جبکہ زمبابوے نے اپنی ٹیم میں دو تبدیلیاں کی ہیں۔ پرنس مسوئر اور چیمو چبھابھا کی جگہ تناشے کمنہوکموے اور ڈونلڈ ٹریپینو کو ٹیم میں شامل کیا گیا ہے۔

مزید پڑھیں:  مریم نواز کی ویڈیو پارٹ ٹو: بڑے بڑوں کی نیندیں اُڑ گئیں

واضح رہے کہ پانچ ایک روزہ میچوں کی سیریز میں پاکستان کو تین صفر کی ناقابل شکست برتری حاصل ہے۔

پیر کو کھیلے گئے تیسرے ون ڈے کرکٹ میچ میں پاکستان نے زمبابوے کو نو وکٹوں سے شکست دے کر سیریز اپنے نام کر لی تھی۔

پہلے میچ میں پاکستان نے میزبان ٹیم کو 201 رنز جبکہ دوسرے میچ میں نو وکٹوں سے شکست دی تھی۔