پاکستان اسٹاک ایکسچینج 4 سال میں پہلی بار 30 ہزار پوائنٹس سے نیچے آگیا

پاکستان اسٹاک ایکسچینج کا 100 انڈیکس چار سال میں پہلی بار 30 ہزار پوائنٹس سے نیچے کی سطح پر بند ہوا جبکہ سونا نئی بلند ترین سطح پر پہنچ گیا۔

شیئرز بازار میں گزشتہ 6 دن سے مسلسل منفی رجحان ہے اور 100 انڈیکس 2200 پوائنٹس گرگیا ہے جبکہ مارکیٹ کیپٹلائزیشن 334 ارب روپے کم ہوئی ہے۔

منفی رجحان کے سبب 100 انڈیکس نے 30 ہزار پوائنٹس کی نفسیاتی حد کو توڑ دیا۔ جمعرات کو کاروباری دن میں ایک موقع پر 100 انڈیکس میں 875 پوائنٹس کی کمی تھی جو کاروبار کے اختتام تک 539 پوائنٹس باقی رہ گئی۔

کاروبار کے اختتام پر 100 انڈیکس 29737 پوائنٹس رہا۔ مارکیٹ میں جمعرات کو 10 کروڑ شیئرز کے سودے ہوئے جن کی مالیت 4 ارب 34 کروڑ روپے رہی۔

مارکیٹ کیپٹلائزیشن 73 ارب روپے کم ہوکر 6 ہزار 49 ارب روپے ہوگئی ہے۔ چھ روز میں 100 انڈیکس 2200 پوائنٹس گر چکا ہے جبکہ مارکیٹ کیپٹلائزیشن 334 ارب روپے کم ہوچکی ہے۔

مزید پڑھیں:  آئی سی سی کی جانب سے جاری کیا گیا کرکٹ ورلڈ کپ 2019 کا شیڈول

Leave a Reply